Pages

Subscribe:

Tuesday, April 3, 2012

زندگی کیا ہے؟


زندگی کیا ہے؟



 
زندگی کیا ہے؟

اسے بھلا کوئی کب سمجھا ہے۔۔
اور موت۔ ۔ ۔؟
موت تو بر حق ہے۔۔
بر حق کیا ہوتا ہے؟
وہ جسے ٹالا نہ جا سکے۔۔
تو اٹل موت کا آنا ہے؟
ہر نفس کو یہ ذائقہ چکھنا ہے۔۔
تو پھر یہ ڈر کیسا ہے؟
انساں غفلت میں کھویا ہے۔۔
موت تو جدائی ہے؟
اسے کب نارسائی ہے۔۔

اپنوں سے جدائی کب برداشت ہوتی ہے؟

اس کے لیے صبر کی سدا ہوتی ہے۔۔
صبر کیسے پر حاصل ہو؟
جب انا للہ و انا الیہ راجعون پہ یقین کامل ہو۔۔
یقین تو ہے پر۔۔۔؟
پر تیاری نہیں۔۔
زندگی کے کم جھمیلے ہیں؟
جھوٹے سارے میلے ہیں۔۔
یہ رعنائیاں پھر بھی پیاری ہیں؟
انہی سے پاک ہونا تیاری ہے
کیا یہ آسان ہے؟
یہ تو تیرا امتحان ہے۔۔
امتحان تو مشکل لگتا ہے؟
خُدا آسانی کرتا ہے۔۔

روکے مجھے بہت سے ریلے ہیں؟

یہ تو زندگی کے جھمیلے ہیں۔۔
اور زندگی کیا ہے۔۔؟
اسے کوئی کب سمجھا ہے۔۔

***







اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔


4 comments:

  1. بہت خوب لکھا ہے آپ نے ۔ بالکل آسان الفاظ میں بہت بڑی باتیں کہہ ڈالیں
    زندگی کیا ہے ؟
    اگر انسان کو سمجھ آ جائے تو دنیا سے فساد رُخصت ہو جائے اور یہی دنیا جنت بن جائے

    ReplyDelete
  2. سچ میں آپنے اتنے آسان اور خوبصورت الفاظ میں زندگی کی حقیقت اور مطلب سمجھا دیا۔۔۔۔بہت خوب مس

    ReplyDelete
  3. عقیل‏ ‏احمدJuly 7, 2013 at 7:20 PM

    بہت‏ ‏حوب‏‏ ‏زندگی‏ ‏کي‏ ‏حقیقت‏ ‏سمجھائي‏ ‏ہے‏ ‏ ‏

    ReplyDelete